بینک فراڈ میں ملوث بھارتی ارب پتی تاجر برطانیہ فرار

21 خرداد 7:9
ارب پتی بھارتی جوہری نیروَ مودی برطانیہ فرار ہونے میں کامیاب ہو گئے ہیں جہاں وہ پناہ لینے کی کوششوں میں ہیں۔ ان پر بھارت کے دوسرے سب سے بڑے بینک کے ساتھ دھوکا دہی کا الزام ہے۔

رپورٹس کے مطابق  فروری میں نیروَ مودی کے بینک فراڈ میں ملوث ہونے کے انکشاف کے بعد سے 47  سالہ  یہ جوہری مفرور ہیں۔  ان پر پنجاب نیشنل بینک کے ساتھ 2.8  بلین روپے یعنی 43.8 ملین ڈالر کی دھوکا دہی کرنے کا الزام ہے۔
دی فنانشل ٹائمز اخبار کے مطابق بھارتی اور برطانوی حکام کا کہنا ہے کہ مودی نے برطانیہ میں ’ سیاسی دشمنی پر کارروائیوں کا نشانہ بنائے جانے‘  کی بنیاد پر پناہ کی درخواست دائر کر رکھی ہے۔ تاہم اس بیان کی مزید تصدیق کے لیے بھارتی اور برطانوی حکام کی جانب سے مزید کوئی بیان سامنے نہیں آیا ہے۔
تحقیقات کاروں نے اب تک 25 افراد کو بھی حراست میں لے رکھا ہے جن پر بینک کو دھوکا دینے کے لیے جعلی کاغذات کی تیاری کا الزام ہے۔
مودی بھارت کی امیر ترین شخصیات میں سے ایک ہیں۔ فوربز کی جانب سے ان کی دولت کا تخمینہ 1.73 بلین ڈالر لگایا گیا ہے جس کے بعد انہیں بھارت کا 85 واں امیر ترین شخص قرار دیا گیا۔  فائر اسٹار ڈائمنڈ برانڈ کے مالک مودی کے بھارت کے علاوہ دنیا کے بیشتر بڑے شہروں میں ڈائمنڈ جیولری اسٹورز موجود ہیں۔ 
دھوکا دہی کا یہ کیس  ایک ایسے وقت میں سامنے آیا  ہے جب بھارتی حکومت پنجاب نیشنل بینک سمیت دیگر قرض دہندہ اداروں کے واجب الادا قرضہ جات اتارنے کی کوششوں میں ہے۔ صرف یہ ہی نہیں بلکہ ایک اور بھارتی ارب پتی وجے مالیا پر بھی قرضوں کی عدم ادائیگی کا الزام ہے اور بھارت ان کوششوں میں ہے کہ 2017 سے برطانیہ میں مقیم وجے مالیا کو بھارت کے حوالے کیا جائے۔

تبصرے بھیجیں

آپ کی رائے

آپ کی رائے